;

١ . روزِ قیامت کی قسم! یاد فرماتا ہوں،

٢ . اور اس جان کی قسم! جو اپنے اوپر ملامت کرے (ف۲)

٣ . کیا آدمی (ف۳) یہ سمجھتا ہے کہ ہم ہرگز اس کی ہڈیاں جمع نہ فرمائیں گے،

٤ . کیوں نہیں ہم قادر ہیں کہ اس کے پور ٹھیک بنادیں (ف۴)

٥ . بلکہ آدمی چاہتا ہے کہ اس کی نگاہ کے سامنے بدی کرے (ف۵)

٦ . پوچھتا ہے قیامت کا دن کب ہوگا،

٧ . پھر جس دن آنکھ چوندھیائے گی (ف۶)

٨ . اور چاند کہے گا (ف۷)

٩ . اور سورج اور چاند ملادیے جائیں گے (ف۸)

١٠ . اس دن آدمی کہے گا کدھر بھاگ کر جاؤں (ف۹)

١١ . ہرگز نہیں کوئی پناہ نہیں،

١٢ . اس دن تیرے رب ہی کی طرف جاکر ٹھہرنا ہے (ف۱۰)

١٣ . اس دن آدمی کو اس کا سب اگلا پچھلا جتادیا جائے گا (ف۱۱)

١٤ . بلکہ آدمی خود ہی اپنے حال پر پوری نگاہ رکھتا ہے،

١٥ . اور اگر اس کے پاس جتنے بہانے ہوں سب لا ڈالے،

١٦ . جب بھی نہ سنا جائے گا تم یاد کرنے کی جلدی میں قرآن کے ساتھ اپنی زبان کو حرکت نہ دو (ف۱۲)

١٧ . بیشک اس کا محفوظ کرنا (ف۱۳) اور پڑھنا (ف۱۴) ہمارے ذمہ ہے،

١٨ . تو جب ہم اسے پڑھ چکیں (ف۱۵) اس وقت اس پڑھے ہوئے کی اتباع کرو (ف۱۶)

١٩ . پھر بیشک اس کی باریکیوں کا تم پر ظاہر فرمانا ہمارے ذمہ ہے،

٢٠ . کوئی نہیں بلکہ اے کافرو! تم پاؤں تلے کی (دنیاوی فائدے کو) عزیز دوست رکھتے ہو (ف۱۷)

٢١ . اور آخرت کو چھوڑ بیٹھے ہو،

٢٢ . کچھ منہ اس دن (ف۱۸) تر و تازہ ہوں گے (ف۱۹)

٢٣ . اپنے رب کا دیکھتے (ف۲۰)

٢٤ . اور کچھ منہ اس دن بگڑے ہوئے ہوں گے (ف۲۱)

٢٥ . سمجھتے ہوں گے کہ ان کے ساتھ وہ کی جائے گی جو کمر کو توڑ دے (ف۲۲)

٢٦ . ہاں ہاں جب جان گلے کو پہنچ جائے گی (ف۲۳)

٢٧ . اور کہیں گے (ف۲۴) کہ ہے کوئی جھاڑ پھونک کرے (ف۲۵)

٢٨ . سمجھ لے گا کہ یہ جدائی کی گھڑی ہے (ف۲۷)

٢٩ . اور پنڈلی سے پنڈلی لپٹ جائے گی (ف۲۸)

٣٠ . اس دن تیرے رب ہی کی طرف ہانکنا ہے (ف۱۹)

٣١ . اس نے (ف۳۰) نہ تو سچ مانا (ف۳۱) اور نہ نماز پڑھی،

٣٢ . ہاں جھٹلایا اور منہ پھیرا (ف۳۲)

٣٣ . پھر اپنے گھر کو اکڑتا چلا (ف۳۳)

٣٤ . تیری خرابی ا ٓ لگی اب آ لگی،

٣٥ . پھر تیری خرابی آ لگی اب آ لگی، (ف۳۴)

٣٦ . کیا آدمی اس گھمنڈ میں ہے کہ آزاد چھوڑ دیا جائے گا (ف۳۵)

٣٧ . کیا وہ ایک بوند نہ تھا اس منی کا کہ گرائی جائے (ف۳۶)

٣٨ . پھر خون کی پھٹک ہوا تو اس نے پیدا فرمایا (ف۳۷) پھر ٹھیک بنایا (ف۳۸)

٣٩ . تو اس سے (ف۳۹) دو جوڑ بنائے (ف۴۰) مرد اور عورت،

٤٠ . کیا جس نے یہ کچھ کیا وہ مردے نہ جِلا سکے گا،